جسٹس شوکت عزیز صدیقی عہدے سے برطرف

صدر مملکت نے جسٹس شوکت عزیز صدیقی کو عہدے سے ہٹادیا
صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے سپریم جوڈیشل کونسل (ایس جے سی) کی سفارش پر اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی کو متنازع تقریر کے معاملے پر انہیں ان کے عہدے سے برطرف کردیا۔
وزارت قانون و انصاف نے جسٹس شوکت عزیز صدیق کی برطرفی کا نوٹیفکیش بھی جاری کردیا۔
وزارت کے جاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ آرٹیکل 209 (5) اور سپریم جوڈیشل کونسل آف پاکستان کی جانب سے 1973 کے آئین کے آرٹیکل 209 (6) کے ساتھ آرٹیکل 48 (1) کے تحت کی جانے والی سفارش پر جسٹس شوکت عزیز صدیقی کو ان کے عہدے سے ہٹایا گیا۔
خیال رہے کہ سپریم جوڈیشل کونسل نے اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی کو اداروں کے خلاف متنازع تقریر کے معاملے پر عہدے سے ہٹانے کی سفارش کی تھی۔
ذرائع کے مطابق سپریم جوڈیشل کونسل نے جسٹس شوکت صدیقی کو ہٹانے کے لیے سمری سیکریٹری قانون کو بھجوائی تھی، جسے منظوری کے لیے صدر مملکت کو بھجوا دیا گیا تھا۔
خیال رہے کہ جسٹس شوکت عزیز صدیقی اسلام آباد ہائی کورٹ کے سینئر جج ہیں جن کے خلاف ملک کے اہم اداروں کے خلاف متنازع بیان دینے کے معاملے میں تحقیقات جاری تھیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں