جیل سے رہائی کے بعد مریم نوازنے پہلا بڑا اعلان کردیا!

لاہور : معروف صحافی صابر شاکر کا کہنا ہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کی رہائی کے بعد جاتی امرا میں ایک بار پھر سوشل میڈیا ٹیموں سے رابطے کیے گئے ہیں۔جس کے بعد مریم نواز نے اس سوشل میڈیا ٹیم کو دوبارہ سے متحرک کر دیا ہے جس کا بنیادی کام فوج اور عدلیہ کے خلاف کام کرنا ہے۔ صابر شاکر کا مزید کہنا تھا کہ میں آپ کو مریم نواز کی صاف الفاظ بتا دوں انہوں نے کہا ہے کہ میں نے فوج اور عدلیہ کو چھوڑنا نہیں ہے۔اسی سلسلے میں دوبارہ سوشل میڈیا ٹیموں کے ممبرز سے رابطہ کیا گیا کہ آپ آئیں اور کام شروع کریں لیکن ان میں سے کئی لوگ نہیں آئے کیونکہ انہیں مریم نواز نے یہ کہا تھا کہ آپ کی یہ نوکری سرکاری نوکری ہے۔
اور کہا گیا تھا کہ ن لیگ کی حکومت چلی بھی گئی تو آپ کی نوکری قائم رہے گی،اور مریم نواز کی سوشل میڈیا ٹیم میں کام کرنے والے اکثر ممبرز تو محکمہ صحت سے وابستہ تھے۔تاہم مریم نواز نے فوج اور عدلیہ کے خلاف کام کرنے کا ٹاسک سوشل میڈیا کو سونپ دیا ہے۔واضح رہے نواز شریف اور مریم نواز رہائی کے بعد سے خاموش ہیں۔نہ تو ان کی طرف سے کوئی بیان سامنے آیا ہے اور نہ ہی کوئی ٹویٹ کی جا رہی ہے۔اور اب اس خاموشی پر سوالات اٹھنے لگ گئے ہیں کہ کیا نواز شریف اور مریم نواز کسی ڈیل کے تحت جیل سے باہر آئے ہیں یا پھر انہوں نے کوئی اعترافی بیان دیا ہے ورنہ یہ خاموش رہنےوالے نہیں ہیں۔
خیال رہے ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا یافتہ نواز شریف اور مریم نواز کو اسلام آباد ہائیکورٹ نے ضمانت پر رہا کیا ہے۔تاہم رہائی کے بعدسے اب تک نواز شریف اور مریم نواز کی خاموشی سوالیہ نشان ہے۔ رہائی کے بعد سے اب تک مریم نواز کی جانب سے بھی کوئی ٹویٹ نہیں کیا گیا اور نہ ہی انہوں نے عوام میں آ کر بات چیت کی۔ ہو سکتا ہے بیگم کلثوم نواز کے چالیسویں کے بعد نواز شریف اور مریم نواز اپنی واضح حکمت عملی بتائیں۔تاہم ابھی تک دونوں نے لمبی چپ سادھ لی اسی لیے کچھ لوگ نواز شریف اور مریم نواز کی رہائی کو ڈیل کا نتیجہ قرار دے رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں