سیاحت کے اعتبار سے سعودی عرب تمام عرب ممالک میں سرفہرست

ریاض(نیوزڈیسک) سیاحت کے اعتبار سے سعودی عرب تمام عرب ممالک میں سرفہرست ہے جہاں 2017ء کے دوران ایک کروڑ 60 لاکھ سے زائد غیر مُلکیوں نے سعودی عرب کا رُخ کیا جبکہ سیاحت کے اعتبار سے عرب ممالک میں متحدہ عرب امارات کا نمبر دُوسرا ہے جہاں گزشتہ سال ایک کروڑ 58 لاکھ سے زائد افراد سیاحت کی غرض سے پہنچے۔
اس بات کا انکشاف اقوام متحدہ کی عالمی تنظیم برائے سیاحت کی جانب سے ایک رپورٹ کے دوران کیا۔ عرب ممالک میں مراکش کا نمبر تیسرا رہا جہاں 2017ء کے دوران ایک کروڑ 13 لاکھ غیر مُلکیوں نے سیر و تفریح کا لطف اُٹھایا۔ سیاحت کے اعتبار سے مصر کا نمبر چوتھا رہا جہاں 81 لاکھ 57 ہزار غیر مُلکی سیاح ریکارڈکیے گئے۔ مصر میں گزشتہ دو برسوں کے مقابلے میں سیاحوں کی گنتی میں 55.1 فیصد کا اضافہ نوٹ کیا گیا۔ یوں ہر سال ان چاروں ممالک میں سیاحوں کی تعداد میں ریکارڈ اضافہ دیکھنے کو مِل رہا ہے۔2016ء کے مقابلے میں 2017ء میں ان ممالک میں سیاحت پر مجموعی طور پر 13 فیصد رقم زیادہ خرچ کی گئی جس کا مثبت نتیجہ سیاحوں کی گنتی کی صورت میں سامنے آیا۔عالمی تنظیم برائے سیاحت کی رپورٹ کے مطابق 2017ء کے دوران مجموعی طور پر 8کروڑ سیاح اور زائرین عرب ممالک کی زیارت اور سیاحت کے لیے آئے۔ان سیاحوں اور زائرین نے عرب ممالک میں قیام کے دوران مجموعی طور پر 77.7ارب ڈالر خرچ کیے۔سیاحت کی عالمی تنظیم کے مطابق 2017ء کے دوران سب سے زیادہ سیاح یورپی مُلک فرانس پہنچے ، جن کی گنتی 8 کروڑ ستر لاکھ ریکارڈ کی گئی۔ اس کے بعد سپین کا نمبر ہے جہاں آنے والے سیاحوں کی تعداد 8 کروڑ 20 لاکھ نوٹ کی گئی، 6 کروڑ 10 لاکھ سیاحوں کے ساتھ چین تیسرے، پانچ کروڑ اڑھائی لاکھ سیاحوں کے ساتھ اٹلی چوتھے نمبر پر براجمان ہیں۔ جبکہ 3 کروڑ 70 لاکھ سیاحوں نے جرمنی کا رُخ کیا جو اس فہرست میں پانچویں نمبر پر آیا ہے۔ دُنیا بھر میں غیر مُلکی سیاحوں کی مجموعی تعداد 1 ارب 32 کروڑ ریکارڈ کی گئی۔ مجموعی طور پر اس پیشے پر 1.34 ڈالر خرچ کیے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں